اسلام محافظ نسواں – جویریہ بتول

اسلام محافظِ نسواں…!!!
(✍🏻:جویریہ بتول).
نہ کر تہذیبِ غیر پر نظر تیرے اپنے دامن میں نور ہے…
کر نگاہ اپنے نصیب پر،جو شعور تھا وہ شعور ہے…
ہر اِک تہذیب کے درمیاں،ہے تیرا مقام کِھلا ہوا…
ہر دَور ہے تازہ دَم تیرا،نہ تھکن سے کہیں یہ چُور ہے…
تو حصارِ عظمت پہ ناز کر جو چہار جانب سے ہے کھڑا…
تیرے حُسن پر کوئی مَیل ہے،نہ کوئی عبرتوں کا ظہور ہے…
اُنہیں مان عزت کو بیچ کر،تجھے ناز حفظ و اماں پر ہے…
اِسی منفرد سی پہچان سے تو عالمِ دیّار میں مشہور ہے…
تیرے دشتِ جاں کو سنوار کر تیرے چمنِ دل کو نکھار دیں…
جنہیں جاں سے بھی تو عزیز ہے وہ مقام تیرا غرور ہے…
یہ جھوٹے نگوں کی ریزہ کاری اندر سے ہے جو شکستہ تَر…
کُچھ کر سکے گی نہ رہبری،جو خود راہ سے مفرور ہے…
تیرے حقوق کی انمٹ تحریر قرآن و حدیث کی صورت…
یہی نامہ ہے ابدی بہار کا،ہر خزاں یہاں رنجور ہے…
نقشِ عائشہ و فاطمہ تیری زندگی کے ہیں راہ نما…
جنت میں اُن کی سرداری میں گر رہنےکو دل یہ مسرور ہے…؟

متعلقہ محمد نعیم شہزاد

محمد نعیم شہزاد ایک ادبی، علمی اور سماجی شخصیت ہیں۔ لاہور کے ایک معروف تعلیمی ادارہ میں انگریزی زبان و ادب کی تعلیم دیتے ہیں۔ اردو اور انگریزی دونوں زبانوں میں نظم اور نثر نگاری پر قادر ہیں۔ ان کی تحاریر فلسفہ خودی اور خود اعتمادی کو اجاگر کرتی ہیں اور حسرت و یاس کے موسم کو فرحت و امید افزاء بہاروں سے ہمکنار کرتی ہیں۔ دین اسلام اور وطن کی محبت ان کی روح میں بسی ہے۔ اسی جذبے کے تحت ملک و ملت کی تعمیر و ترقی میں پیش پیش رہتے ہیں۔

تجویز کردہ

امر جلیل اور بعض دیگر معتذرین کے باطل نظریات اور راہ حق – جویریہ بتول

امر جلیل اور بعض دیگر معتذرین کے باطل نظریات اور راہ حق جویریہ بتول اللّٰہ …

دعا – ام شاہد

دعا ✍️از قلم ام شاہد تجھ سے اے مالک تیری یہ نالائق غلام………….. چند چیزیں …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے