ہم ہیں بیٹیاں – جویریہ بتول

ہم ہیں بیٹیاں……!!!
✍🏻:جویریہ بتول
ہم ہیں بیٹیاں …ہم بہنیں…ہم مائیں ہیں…!!!
جس روپ میں ہوں ہم،ہر صورت ہی وفائیں ہیں…
ہیں پیکرِ صبر و رضا،چٹان سی ہے ہر ایک اَدا…
خوشی و غم کی ہم نوا،ہر موڑ پہ ہم دعائیں ہیں…
ہر انسان ہی پلتا ہے ان رِشتوں کی گودوں میں…
اِن ہاتھوں میں راحت ہے،یہ ہر درد کی دوائیں ہیں…
ہم عزت ہیں…ہم رفعت ہیں…ہم رحمت ہیں…
گھر بھر کی برکت ہم سے،وطن کی ہم ردائیں ہیں…
قوم کا مستقبل ہے وابستہ ہماری فکر و عمل سے…
روشن دیے ہیں ذہن میں یا چھائی دل پہ خزائیں ہیں؟
ان گودوں میں پَل کر ہی شاہین پرواز بھرتے ہیں…
اسی تربیت میں غفلت کی ملتی کڑی سزائیں ہیں…
ہم میں سے ہر ایک کو ملا مقام بلند سے بلند تَر ہے…
جس زاویے سے دیکھیں خود کو جنت کی ہم ہوائیں ہیں…

متعلقہ محمد نعیم شہزاد

محمد نعیم شہزاد ایک ادبی، علمی اور سماجی شخصیت ہیں۔ لاہور کے ایک معروف تعلیمی ادارہ میں انگریزی زبان و ادب کی تعلیم دیتے ہیں۔ اردو اور انگریزی دونوں زبانوں میں نظم اور نثر نگاری پر قادر ہیں۔ ان کی تحاریر فلسفہ خودی اور خود اعتمادی کو اجاگر کرتی ہیں اور حسرت و یاس کے موسم کو فرحت و امید افزاء بہاروں سے ہمکنار کرتی ہیں۔ دین اسلام اور وطن کی محبت ان کی روح میں بسی ہے۔ اسی جذبے کے تحت ملک و ملت کی تعمیر و ترقی میں پیش پیش رہتے ہیں۔

تجویز کردہ

دعا – ام شاہد

دعا ✍️از قلم ام شاہد تجھ سے اے مالک تیری یہ نالائق غلام………….. چند چیزیں …

خودی کو کر بلند اتنا – ام شاہد

خودی کو کر بلند اتنا ✍️از قلم ام شاہد اپنے اخلاق و کردار سے دوسروں …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے