سلائڈر

غزوہ بدر، الرحیق المختوم سے اختصار – عمران محمدی

*غزوہ بدر* (اختصار من "الرحیق المختوم”) جمع و ترتیب *عمران محمدی* عفا اللہ عنہ *============* قریش کا ایک تجارتی قافلہ شام سے مکہ واپس لوٹ رہا تھا اس قافلے میں اہل مکہ کی بڑی دولت تھی ، یعنی ایک ہزار اونٹ تھے جن پر کم ازکم پچاس ہزار دینار (دوسو …

مزید پڑھیں

یہ اپنا وطن ہے اپنی شان – جویریہ بتول

(✍🏻:جویریہ بتول)… یہ اپنا وطن ہے اپنی شان… نظریہ اِس کا ہے اپنا ایمان…! کیا تھا عہد جب آسماں تلے… قافلے وفا کے پھر یوں چلے… قدموں سے ایسے قدم وہ ملے… روک نہ سکا جنہیں کوئی طوفان… وہ جو خواب تھا اقبال کا… تھا جواب وہ ہر اِک سوال …

مزید پڑھیں

مرد، ایک جابر یا محافظ – شاہ بانو

مرد اک جابر یا محافظ تحریر شاہ بانو اس وقت یوں لگتا ہے دنیا میں عورتوں کو بڑا مقام دیا جا رہا ہے اور ہر طرف بس عورت کی چلتی ہے جہاں بھی عورت پہ ظلم ہو وہاں عورت کے حامی لوگ پہنچ جاتے ہیں اور پوری دنیا اس عورت …

مزید پڑھیں

وطن کے محافظ – جویریہ بتول

چمن کے محافظ…!!! ✍🏻:جویریہ بتول فضاؤں کا سینہ چیر کر… ہواؤں کے رُخ پھیر کر… تند و تیز سی لہروں پر… سرحدوں کے پہروں پر… بھرو اُڑان تم تیر کی طرح… وفا سے اُٹھے خمیر کی طرح… اک گہرے سے یقیں کی طرح… جھپٹتے ہو شاہیں کی طرح… جو سرحدوں …

مزید پڑھیں

نابالغ قوم – جویریہ بتول

ہمیں فکری لحاظ سے بالغ ہونے کی ضرورت ہے…!!! (✍🏻:جویریہ بتول). قوم کی مضبوطی کا انحصار صرف معاشی برتری یا بلند و بالا عمارات پر ہی نہیں ہوتا بلکہ فکری بلوغت اور دور اندیشی سے مالا مال اقوام ہر دور اور ہر وقت میں خود کو کامیاب بنا سکتی ہیں…وہ …

مزید پڑھیں

عورت، اسلام کی آغوش محبت میں _ جویریہ بتول

مسلمان عورت…!!! (✍🏻:جویریہ بتول) اے مسلمان عورت تو پہچان لے مقام اپنا… وقار اپنا……کردار اپنا……انعام اپنا… جب تیرا وجود بھی زمیں پر باعثِ آزار تھا… انداز بے رحم تھا بہت،نہ حقوق کا معیار تھا… پیدائش پر بیٹی کے باپ سوچتا کئی بار تھا… اسلام نے جو آ کر دیا، سمجھ …

مزید پڑھیں

یادوں کے جگنو – ام شاہد

شاہد کی یاد میں ✍️یادوں کے جگنو ایسے ہوتے ہیں جو کھلی ہتھیلیوں سے نہیں اڑتے کچھ تتلیوں کے رنگ انگلیوں کو بار بار جھٹکنے سے بھی نہیں مٹتے….. کچھ لوگ ایسے ہوتے ہیں جو داستاں ہوتے. ہوئے امر ہو جاتے ہیــــــــں جو منوں مٹی کے نیچے ہوتے ہوئے بھی …

مزید پڑھیں

ایک تلخ حقیقت – ابنِ آفتاب

ایک تلخ، مگر حقیقت! ابن آفتاب اڑنے کے لیے پر چاہیے ہوتے ہیں اور چلنے کے لیے پیر، ہمارا المیہ یہ ہے کہ پیر ہونے کے باوجود ٹھیک سے چل نہیں سکتے اور پر کی عدم موجودگی میں اڑنے کے خواب دیکھتے ہیں – ترقی کا مطلب، غیر موجود وسائل …

مزید پڑھیں

راستے وفا کے – جویریہ بتول

راستے وفا کے…!!! (✍🏻:جویریہ بتول). وہ ایک خزرجی نوجوان تھا…تجارت پیشہ،خوش حال سا شخص… ایک صبح نیند سے بیدار ہو کر اپنے گھر کی چھت پر نصب بت کی طرف گیا…اُسے بہترین خوشبو لگائی،ریشمی لباس پہنایا آور اپنے کاروبار کی طرف نکل گیا… راستے میں اُسے مدینہ کی گلیوں میں …

مزید پڑھیں

ہم ہیں بیٹیاں – جویریہ بتول

ہم ہیں بیٹیاں……!!! ✍🏻:جویریہ بتول ہم ہیں بیٹیاں …ہم بہنیں…ہم مائیں ہیں…!!! جس روپ میں ہوں ہم،ہر صورت ہی وفائیں ہیں… ہیں پیکرِ صبر و رضا،چٹان سی ہے ہر ایک اَدا… خوشی و غم کی ہم نوا،ہر موڑ پہ ہم دعائیں ہیں… ہر انسان ہی پلتا ہے ان رِشتوں کی …

مزید پڑھیں